National

LATEST NATIONAL NEWS. READ MORE

Business News

Current Business News. Read More

Company News

Corporate Company News. Read more

Official News

Government Official News. Read more

Press Releases

All Press Releases. Read More

Advertisement
Home » General

سیاؤشان، چین: ایک ابھرتی ہوئی کاؤنٹی معیشت سے بین الاقوامی شہری ضلع تک

November 23, 2017

ہانگچو، چین، 22 نومبر 2017ء/پی آرنیوزوائر/–

18 نومبر 2017ء کو مشرقی چین کے سب سے زیادہ ترقی یافتہ شہری اضلاع میں سے ایک ہانگچو شہر کے سیاؤشان ضلع میں ایک خصوصی “خاندانی اجتماع” ہوا۔ 800 سیاؤشان افراد، جو ملک اور دنیا بھر میں مختلف شعبہ جات کی ممتاز شخصیات ہیں، پہلی بار سیاؤشان ضلعی حکومت کے مطالبے پر دوبارہ ملاپ کے لیے گھر واپس آئے۔

تقریباً 40 سال کی ترقی کے بعد سیاؤشان، جو کاروباری منتظمین اور اصلاح پسندوں کے شہر کے طور پر معروف ہے، چین میں ٹاؤن شپ معیشت کی مستحکم کارکردگی کے ساتھ ایک معروف کاؤنٹی معیشت سے آج ایک روایتی بین الاقوامی شہری ضلع میں تبدیل ہو چکا ہے۔

سیاؤشان چین کے دریائے چیانتانگ کے جنوبی کنارے پر واقع ہے۔ یہ جدید ضلع جی20 ہانگچو اجلاس کے مرکزی مقام کا میزبان ہے۔ یہ اپنی اقتصادی ترقی کی وجہ سے معروف ہے اور بارہا چین میں سرمایہ کاری کے لیے بہترین مقام قرار دیا جا چکا ہے۔ اصلاحات اور چین کے کھلنے کے بعد سے سیاؤشان کے افراد نے چین کی نجی معیشت کو پروان چڑھانے میں ایک معجزہ تخلیق کیا۔

لو گوانچیو، جو حال ہی میں وفات پا گئے ہیں، سیاؤشان سے تھے۔ انہیں چین کے نجی ملکیت کے اداروں کا “گاڈفادر” مانا جاتا ہے۔ 1970ء کی دہائی کے اوائل میں انہوں نے وانگ سیانگ گروپ کی بنیاد رکھی اور چین میں پہلا او ای ایم بنایا جس نے جنرل موٹرز گاڑیوں کے پرزہ جات اور جزو فراہم کیے۔ اس کے امریکی ماتحت ادارے نے 26 امریکی ریاستوں میں درجنوں کاروبار کھولے اور امریکا میں 8,000 سے زیادہ ملازمتیں تخلیق کیں۔ ریاست الینوائے نے ریاست کے لیے چینی ادارے کے حصے کو تسلیم کرتے ہوئے ہر سال 12 اگست کو “وانگ سیانگ دن” قرار دیا ہے۔

1986ء میں کیمیکل کمپنی کے طور پر قیام سے چوان ہوا گروپ ایک معروف اور متنوع جدید نجی ادارے میں تشکیل ہونا شروع ہوا۔

حالیہ سالوں میں سیاؤشان، چین کا “اقتصادی پہلوان”، “شہر کی تبدیلی کے ذریعے ایک آل راؤنڈ معیشت اور سماجی تبدیلی کو تحریک دینے” کے مشن کو سہارا دے رہا ہے۔

مقامی حکومت اس حقیقت کا ادراک کرتی ہے کہ جدت طرازی ترقی کا نمبر ایک محرّک ہے۔

سیاؤشان اکنامک اینڈ ٹیکنالوجیکل ڈیولپمنٹ زون میں واقع ہانگچو بے انفارمیشن پورٹ سیاؤشان میں انٹرنیٹ صنعت کے لیے ایک اہم “انکیوبیشن” پلیٹ فارم ہے۔ یہاں چین کے 30 سے زیادہ معروف انٹرنیٹ ادارے جمع ہوئے اور یہ سیاؤشان کے لیے ایک اہم محرک بن چکا ہے کہ ایک ساخت گری کے علاقے کو انفارمیشن معاشی علاقے میں آگے کی جانب اہم قدم اٹھائے۔

اس وقت سیاؤشان کی نئی صنعتی تشکیل، جس میں انٹیلی جینٹ مینوفیکچرنگ مرکزی حیثیت رکھتی ہے، صورت گری کررہی ہے۔ چین کا پہلا بگ ڈیٹاالائنس اور پہلی صنعتی بگ ڈیٹا لیبارٹری سیاؤشان میں قائم ہوئی۔ علی بابا اور نیٹ ایز جیسے انٹرنیٹ کے عظیم ادارے، ساتھ ساتھ معروف اے آئی اداروں نے بھی یہاں قیام کا انتخاب کیا۔

جی20 ہانگچو اجلاس کا مرکزی مقام سیاؤشان میں واقع ہانگچو انٹرنیشنل ایکسپو سینٹر ہے۔ جس علاقے میں یہ واقع ہے — اولمپک اسپورٹس ایکسپو سٹی 2022ء ہانگچو ایشین گیمز کی بھی میزبانی کرے گا۔

اعداد و شمار کے مطابق 25 ستمبر 2016ء سے جب یہ مرکز کھولا گیا، یہ 1,800 سے زیادہ کانفرنسوں اور 37 نمائشوں کی میزبانی کرچکا ہے جس کا کل نمائشی رقبہ 3.5 ملین مربع میٹر سے زیادہ ہے۔ اس کا جی20 اجلاس ایکسپیریئنس ہال کا ایک ملین مرتبہ دورہ کیا جاچکا ہے۔

بین الاقوامی کانفرنس منتظمین کی جانب سےسراہے گئے ہانگچو انٹرنیشنل ایکسپو سینٹر نے 2017ء میں آئی سی سی اے (انٹرنیشنل کانگریس اینڈ کنونشن ایسوسی ایشن) میں کامیابی سے شمولیت اختیار کی اور یو آئی اے (یونین آف انٹرنیشنل ایسوسی ایشن) کا چین سے واحد رکن بنا۔ مستقبل میں مزید بین الاقوامی میلے، کانفرنسیں اور ثقافتی تقریبات ہوں گی۔

یہ امر مسلّمہ ہے کہ سیاؤشان چین کے سب سے زیادہ متحرک نمائشی شہر اور کنونشن اور نمائش کے لیے دنیا کے معروف مقام میں تبدیل ہوگا۔ اندازہ ہے کہ 2019ء تک کل نمائشی آمدنی 15 ارب یوآن (2.3 ارب امریکی ڈالرز) تک پہنچے گی اور 1,000 سے زیادہ نمائشیں ہوں گی۔ پیشن گوئی کی جا سکتی ہے کہ سیاؤشان اس طرح ایک نئی صنعت کو بنائے گا – اعلیٰ ترین نمائش۔

جی20 ہانگچو اجلاس کے بعد سیاؤشان ہانگچو کو دنیا سے منسلک کرنے والا اہم شہری ضلع بن چکا ہے۔ مستقبل میں یہ ضلع کنونشن اور نمائش کی صنعت کو پوری قوت سے تعمیر کرے گا اور تمام تر کوششیں “ایگزی بیشن+” کے تصور پر مبنی چین کے بین الاقوامی شہر کی تعمیر کے لیے کی جائے گی۔

Related Posts

Tags: , ,